MG Mazloom Gill

Quotes (255)

انسان کی زندگی میں جذبات اھم کردار ادا کرتے ہیں، خواہ حذبات محبت کے ہوں یا نفرت کے ، ایثار کے ہوں یا خود غرضی کے ، انسان ھمیشہ انہی کا غلام رہتا ہے
Mazloom Gill
ﮨﻢ ﺟﺐ ﺍﭘﻨﮯ ﺁﭖ ﮐﻮ ﺁﺋﯿﻨﮧ ﻣﯿﮟ ﺩﯾﮑﮭﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺗﻮ ﭼﮩﺮﮦ ، ﮈﯾﻞ ﮈﻭﻝ ﺍﻭﺭ ﻇﺎﮨﺮﯼ ﺟﺜﮧ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﺁﺗﺎ ﮨﮯ۔ ﺳﻄﺤﯽ ﻗﺴﻢ ﮐﮯ ﻟﻮﮒ ﺍﺳﮯ ﮨﯽ ﺍﻧﺴﺎﻥ ﮐﯽ ﺍﺻﻞ ﺷﺨﺼﯿﺖ ﺳﻤﺠﮫ ﻟﯿﺘﮯ ﮨﯿﮟ۔ ﻟﯿﮑﻦ ﺣﻘﯿﻘﺖ ﻣﯿﮟ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﺍﻧﺪﺭ ﺑﮭﯽ ﺍﯾﮏ ﺷﺨﺼﯿﺖ ﻣﻮﺟﻮﺩ ﮨﮯ ﺟﺴﮯ ﮨﻢ ﻧﻔﺲ، ﺧﻮﺩﯼ ، ﺍﭘﻨﺎ ﺁﭖ ، ﻣﯿﮟ ، ﺭﻭﺡ ، ﺩﻝ ﯾﺎ ﮐﺴﯽ ﺑﮭﯽ ﻧﺎﻡ ﺳﮯ ﻣﻨﺴﻮﺏ ﮐﺮ ﺳﮑﺘﮯ ﮨﯿﮟ ۔ ﺍﺱ ﺑﺎﻃﻦ ﮐﯽ ﺷﺨﺼﯿﺖ ﮐﺎ ﺑﮭﯽ ﺍﯾﮏ ﭼﮩﺮﮦ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ، ﺍﺱ ﮐﮯ ﮨﺎﺗﮫ ﭘﺎﻭٔﮞ ، ﺟﺴﻢ، ﺑﻮ، ﺯﺑﺎﻥ ﺳﺐ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ۔ ﺍﺱ ﺑﺎﻃﻨﯽ ﺟﺴﻢ ﭘﺮ ﻟﮕﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﻏﻼﻇﺖ ﺍﺗﻨﯽ ﮨﯽ ﺑﺮﯼ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ ﺟﺘﻨﯽ ﻇﺎﮨﺮﯼ ﺑﺪﻥ ﭘﺮ ﻟﮕﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﮐﯿﭽﮍ ۔ﺍﺱ ﺑﺎﻃﻨﯽ ﺟﺴﻢ ﮐﯽ ﻏﻼﻇﺘﯿﮟ ﺗﮑﺒﺮ، ﻧﻔﺲ ﭘﺮﺳﺘﯽ، ﺗﻌﺼﺐ ، ﻣﻨﻔﯽ ﺳﻮﭺ، ﺣﺴﺪ ، ﮐﯿﻨﮧ، ﺍﻧﺘﻘﺎﻣﯽ ﻧﻔﺴﯿﺎﺕ ﺍﻭﺭ ﺧﺪﺍ ﮐﯽ ﻧﺎﻓﺮﻣﺎﻧﯽ ﮨﯿﮟ۔ ﺩﻭﺳﺮﯼ ﺟﺎﻧﺐ ﺍﺱ ﻭﺟﻮﺩ ﮐﺎ ﭘﺎﮐﯿﺰﮦ ﻟﺒﺎﺱ ﻋﺠﺰﻭ ﺍﻧﮑﺴﺎﺭﯼ، ﻧﻔﺲ ﭘﺮ ﮐﻨﭩﺮﻭﻝ، ﻣﺜﺒﺖ ﺳﻮﭺ، ﺩﺭﮔﺬﺭ ﮐﯽ ﻧﻔﺴﯿﺎﺕ ﺍﻭﺭ ﺧﺪﺍ ﮐﯽ ﻓﺮﻣﺎﮞ ﺑﺮﺩﺍﺭﯼ ﺁﺭﺍﺳﺘﮧ ﮨﮯ۔
Mazloom Gill
نیکیون کی تباہی و بربادی کے لیے حسد ہی کافی ھے.دوسرون کی تباہی و بربادی کے منصوبے بنانا سونے پہ سہاگہ ھے. یہ سب کام بھی کرنا اور اپنے آپ کو نیک بھی سمجھنا ایک عظیم دھوکہ ھے اور شیطان کا خوبصورت فریب.
Mazloom Gill

Comments (7)

بہت اچھے شاعر ہیں۔ لیکن اشعار میں خشکی زیادہ ھے۔
حقیقت پسند شاعر مگر لب و لہجہ تھوڑا تلخ ھے۔
Sir your poetry style different from others but have stinging philosophy. Is it true?
All Comments